Seena Ba Seena 120

سینہ بہ سینہ قسط نمبر 16

سینہ بہ سینہ (آف دا ریکارڈ) پارٹ 16….

لوجی انتظار ختم ہوا …ٹیزر کیا پوسٹ کیا…پرسنل فون پر ایس ایم ایس اور کالز کی بهرمار ہوگئی..سب کو تفصیل جاننے کی خواہش تهی سب کو کہا انتظار کریں..لیجئے کچه اپ ڈیٹس حاضر ہیں..

پہلے بات دنیا نیوز کی…کاکامنا کے متعلق میں نے بہت پہلے اسی سلسلے میں لکها تها کہ دنیا میں حلالہ کے بعد وڈے چینل کا رخ کریں گے.. دنیا میں ایک بڑا عہدہ ملنے کے بعد دسمبر میں انکے تمام اختیارات ختم کردیئے گئے اور صرف اپنے ڈیڑه گهنٹے کے پروگرام تک محدود کردیا گیا..لیکن اب کنفرم ہوگیا ہے کہ وڈے چینل کی دوسری منزل پر انکی جگہ بنادی گئی..چهٹی منزل سے چهٹی پر ہونگے یعنی…ڈمپ کردیا جائے گا..اب ان کی 24 رکنی ٹیم کا کیا ہوگا..اس کا بهی جلد بتاونگا.. دنیا نیوز کے ہی ایک اور “کے کے” بهی اڑنے کیلئے پرتول چکے ہیں.. اس بار ان کی منزل کراچی کا ایک اور چینل ہوگا…وڈے چینل کا نہیں کہہ رہا.. دنیا نیوز کی ہی ایک اور اہم شخصیت بهی نئی منزل کا قصد کرچکی ..ان کے متعلق کچه نہیں کہونگا کیونکہ یہ میرے استاد، باس، بڑے بهائی اور سب کچه ہیں..اور الیکٹرانک میڈیا میں انتہائی قابل اور کام والی شخصیت ہیں… لیکن وہاں اب انکے کام میں رکاوٹیں ڈالی جارہی ہیں جس کی وجہ ہجرت ضروری ہوگئی ہے..

وڈے چینل کے تهنک ٹینک نے سرجوڑلیا کہ وڈے رپورٹر جوکہ وڈے مالک کے چہیتے بهی ہیں کی خبر کیسے جهوٹی ہوگئی..امریکی وزارت خارجہ نے بهی ایگزیکٹ کے خلاف کوئی لیٹر جاری نہ کرنے کا بیان جاری کردیا..یہ بهی اطلاعات ہیں کہ وڈا چینل ایک اور “بریکنگ” کی تیاری کررہا ہے جس کا انہیں اندازہ نہیں کہ وہ ایک بار پهر منہ کی کهائیں گے.. ایگزیکٹ اور بول کے حوالے سے اب تک وڈے چینل اور وڈے چینل کی کوئی خبر درست نہیں نکلی جس پر تهنک ٹینک اس بار کچه ایڈونچر کے موڈ میں ہے..بہت جلد آپ سب وہ بهی دیکه لیں گے…

گورمے بیکری والوں کا چینل بهی دو ماہ میں آنے کی اطلاعات جس کیلئے عمران یعقوب صاحب نے ذمہ داریاں سنبهال لی ہیں…گورمے چینل کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ مارکیٹ میں سب سے پہلے بول والاز کو ٹارگٹ کرینگے اور اپنے چینل میں جگہ دینے کی کوشش کرینگے..

اب بات بول کی…8 فروری کو بول ایکشن کمیٹی کے احتجاج کی تیاریاں مکمل ہیں.. احتجاج ابهی ہوا نہیں اس کے مثبت اثرات کی خبریں چاروں طرف سے آنا شروع ہوگئی ہیں.. مرکزی صدر سبوخ سید کی قیادت میں بول والاز اب میدان میں نکل پڑے ہیں… اس موقع پر ہمیں اتحاد و اتفاق کی ضرورت ہے… کچه لوگوں کو بہکایا جارہا ہے کسی کو خوف اور لالچ ہے…ہمارے جو دوست اب دیگر اداروں میں جاب کررہے ہیں ان سے بهی درخواست ہے کہ اس احتجاج میں شریک ہوں..رازق اللہ سبحانہ تعالی کی ذات ہے…اگر کسی سیٹه کے ہاته میں رزق ہوتا تو پهر ساری دنیا بهوکی مرجاتی…

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں